کے ای ایس سی کے محنت کشوں کی فتح

 

) رپورٹ) کے ای ایس سی کی انتظامیہ نے اپریل کے مہینے میں 4500سے زائد محنت کشوں کو برطرف کردیا گیا۔جس کے خلاف سی بی اے اور دیگر یونینز نے ایک اتحاد تشکیل دے دیا اور اس فیصلے کے خلاف پریس کلب کے سامنے بھوک ہڑتالی کیمپ لگا یا،ان کا مطالبہ تھاکہ محنت کشوں کی برطرفی کو واپس لیا جائے۔ہر روز ہزاروں محنت کش جمع ہوتے اور جدوجہد کا علم بلند کرتے۔
یہ جدوجہد 89روز تک مختلف مراحل سے گزرتی رہی۔محنت کشوں کی حمایت میں شہر میں ایک روز ہڑتال بھی کی گی،مختلف مواقعوں پر ہزاروں افراد پر مشتمل ریلیاں بھی نکالی گئیں۔اس کے علاوہ گورنر ہاوس کے باہر بھی دھرنا دیا گیا۔ایم کیوایم نے صرف مختلف علاقوں میں زبردستی کے ای ایس سی کے سنٹرز کھلوئے،بلکہ ہڑتالی محنت کشوں پر حملے بھی کئے۔
آخر فیصلہ کن لمحہ تب آیا ،جب محنت کشوں نے کے ای ایس سی کے مرکزی دفاتر کا گھیراو کر لیا،جس کے بعد گورنر اور حکومت سندھ نے مداخلت کرتے ہوئے ،چند روز کا وقت مانگا لیا اور یوں26جولائی کو طویل مذاکرات کے بعد انتظامیہ نے محنت کشوں کو بحال کرنے اور ان کے تمام واجبات ادا کرنے کا اعلان کردیا۔
یہ کے ای ایس سی کے محنت کشوں کی ہمت،جرات اور استقامت کے ساتھ تیں مہینے کی جدوجہد کا نتیجہ ہے،جو ان کی فتح کی صورت میں سامنے آیا۔یہ پاکستان کے محنت کشوں اور تبدیلی کی جدوجہد کرنے والوں کے لیے اہم فتح ہے۔ جو ان کو جدوجہد اور مزاحمت کا حوصلہ دیتی ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: