لاہور میں لیڈی ہیلتھ ورکرز پرمال روڈ کے تاجروں کا حملہ

لیڈی ہیلتھ ورکرز پچھلے ایک سال سے زائد عرصے سے اپنے محکمے کے خاتمے،نوکریوں کو مستقل کرنے اور تنخواہوں کی عدم ادائیگی اوراس میں کے احتجاج کررہیں۔ ریاست کے تمام تر جبر اور تشدد کے باوجود یہ اپنی جدوجہد کو جاری رکھے ہوئی ہیں،بلکہ یہ جدوجہد کی نئی روایت کو جنم دئے رہی ہیں۔پچھلے 4ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف یہ پورے پنجاب میں سراپا احتجاج تھی،اسی حوالے سے ہزاروں لیڈی ہیلتھ ورکرز جو پورے پنجاب سے لاہور آئیں تھیں ،انہوں نے پرامن احتجاج کرتے ہوئے مال روڈلاہور کو بلاک کردیا۔تاکہ ان کی چار ماہ سے غیر ادا شدہ تنخواہیں ادا کی جائیں اور ان کی نوکریوں کو مستقل کیا جائے۔تو ان پر مال روڈ کے تاجروں نے حملہ کردیااور پولیس اس صورتحال کو کھڑی دیکھتی رہی اور وہ خواتین کی مد د کے لیے آگے نہیں بڑھی،بلکہ مظاہرین کے مطابق پولیس نے ان کا گھیراو کرکے غنڈوں کو حملہ کرنے کا مواقع فراہم کیا،جس سے دوڈرائیور بھی زخمی ہوگے ۔
باہمت لیڈی ہیلتھ ورکرز اور ان کے ساتھی مرد محنت کشوں نے،مال روڈکے تاجروں کے حملے کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور ان کو پیچھے ہٹنے پر مجبور کردیا،جن کو صوبائی حکومت کی مکمل حمایت حاصل تھی۔لیڈی ہیلتھ ورکرز کا شعور بہت بلند تھا،وہ کہ رہیں تھی کہ صوبائی اور وفاقی حکومت نے ان کو مذاق بنا دیا اور وہ ہمارے ساتھ کھیل رہے ہیں۔ہمیں اپنی قوتوں پر بھروسہ کرنا ہوگا اور ان کو تعمیر کرنا ہوگا،یوں ہی ہم حکمرانوں کو اپنی بات ماننے پر مجبور کرسکتے ہیں۔اس مواقع پر انقلابی سوشلسٹ موومنٹ کے ساتھیوں نے لیڈی ہیلتھ ورکرز کے ساتھ اظہار یکجہتی کی ۔
ہم مطالبہ کرتے ہیں
وکلاء، ٹریڈیونینسٹو،سیاسی و سماجی کارکنان پر مشتمل کمیشن تشکیل دیا جائے،جو نہ صرف لاہور کے واقعے بلکہ دیگر شہروں میں ہونے والے حملوں کی انکوائری کرئے۔
لیڈی ہیلتھ ورکرز ،سپروازر اورباقی محنت کشوں کی تنخواہوں میں 200فیصد اضافہ کیا جائے۔
ان کو کام کے لیے پیٹرول الاؤنس دیا جائے۔
تمام محنت کشوں کو مستقل کیا جائے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: